April 20, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/rubbernurse.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253
من الجزائر (تعبيرية- آيستوك)

الجزائر میں کچھ علماء اور مبلغین اور سوشل میڈیا سائٹس کے ذریعے مختلف موضوعات پر مواد پیش کرنے والے انفلوئنسرزکے درمیان اختلافات محاذ آرائی کی شکل اختیار کررہے ہیں۔

سوشل میڈیا پر صارفین کی طرف سے ان دونوں گروپوں کی حمایت اور مخالفت میں آراء بھی آ رہی ہیں۔ انفلوئنسرز کی حمایت کرنے والے صارفین آزادی اظہار رائے کی بنیاد پر انہیں سوشل میڈیا پر اپنے پسندیدہ موضوعات پر مواد پیش کرنے کی حمایت کرتے ہیں۔

اگرچہ الجزائر میں انفلوئنسزر کی طرف سے فراہم کردہ مواد بہت سے دوسرے ممالک میں عام طور پر تنقید سے خالی نہیں ہے، لیکن متعدد مبلغین نے اپنے منبر چھوڑ کر سوشل میڈیا کے صفحات کے ذریعے ان پر دھاوا بول دیا۔ تنقید کرنے والوں میں ایک مبلغ یوسف عبدالسمیع بھی ہیں جن کے ٹک ٹاک اور فیس بک پر پیجز کے لاکھوں فالورز ہیں۔

عبدالسمیع کو معاشرے میں کچھ مظاہر پر تنقید کے لیے جانا جاتا ہے لیکن انہوں نے حال ہی میں “ٹک ٹاک” پر گلوکاروں پر تنقید کرنے کے لیے “اپنے پلیٹ فارم سے سخت پیغام بھیجا۔

“مینوین اور پلاسٹک سرجری‘‘

جہاں تک عبدالسمیع کے تازہ ترین “ہدف” کا تعلق ہے تو وہ ہدف رائی گلوکار “فیصل المینیون” ہیں جو کہ پرجوش موسیقی کے لیے مشہور ہیں۔ اس کے علاوہ وہ کینیڈا میں تیسرے درجے کے فٹ بال کھلاڑی ہیں اور انسٹاگرام پیج جس کوانہیں بیس لاکھ سے زیادہ لوگ فالو کرتے ہیں۔

ایسا لگتا ہے کہ عبدالسمیع کے “مینیون” پر حملے کی وجہ یہ ہے کہ مؤخر الذکرکی پلاسٹک سرجری ہوئی، کیونکہ اس نے اپنے صفحہ پر اس کی ایک ویڈیو پوسٹ کی جس میں “بوٹوکس” کے انجیکشن لگائے گئے۔ انہوں نے لکھا کہ مردوں کی جھریاں ختم کرنے کے لیے ’بوٹوکس‘ کے انجیکشن مفید ہیں۔

تاہم اس پوسٹ نے بظاہر الجزائری عالم کو مشتعل کردیا۔ انہوں نے ایک ویڈیو میں استفسار کیا؟ ایک آدمی اپنے چہرے کو بوٹوکس کا انجیکشن کیسے لگا سکتا ہے؟”

انہوں نے 2018ء میں مغرب میں بہترین ابھرتے ہوئے آرٹسٹ کے ایوارڈ کے فاتح کو بھی تند و تیز الفاظ میں مخاطب کرتے ہوئے کہا ک “کیا آپ کو ایسا کرنے میں اپنی مردانگی پر شک ہے؟۔ ایسا تو عورتیں کرتی ہیں‘‘۔

عبدالسمیع کی پوسٹ کے بعد بڑی تعداد میں صارفین نے ان کی حمایت اور مخالفت میں رد عمل دیا۔

الجزائر کا منظر

الجزائر کا منظر

کچھ لوگوں نے عبدالسمیع کے مؤقف کی حمایت کی اور کہا کہ ایسی کون سی خفیہ وجووہات ہیں جن کی وجہ سے “المنیون” کو ایسا کرنے پر مجبور کیا گیا۔

ایک صارف نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ جناب مولانا صاحب گلوکار کے پاس بہت پیسہ ہے جس نے اسے ایسا کرنے کا موقع دیا۔

تاہم دوسروں کا خیال تھا کہ عبدالسمیع دوسروں کی ذاتی آزادی میں مداخلت کر رہے ہیں۔ ایک صارف نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ “آپ کو کیا پرواہ ہے؟ ہر کوئی اپنی زندگی میں جو کچھ کرتا ہے وہ کرنے کے لیے آزاد ہے۔ اور فیصل میرے رول ماڈل اور لیجنڈ ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *